سپریم کورٹ کی پنجاب حکومت کو بلدیاتی اداروں کی بحالی کیلئے 20 اکتوبر تک مہلت

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے پنجاب حکومت کو صوبے کے تمام بلدیاتی اداروں کو کھولنے اور فعال کرنے کیلئے 20 اکتوبر کی مہلت دیدی۔عدالتی فیصلے کے باوجود بلدیاتی اداروں کو غیر فعال رکھنے پر پنجاب حکومت کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس نے سیکرٹری لوکل گورنمنٹ پنجاب نور الامین منگل کی سرزنش کرتے ہوئے کہا کہ یہ کس قسم کا سیکرٹری لوکل گورنمنٹ رکھا ہوا ہے۔ اس کا جواب کدھر ہے۔سیکرٹری لوکل گورنمنٹ نے کہا کہ عدالت جواب جمع کرانے کے لیے مہلت دے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ سیکرٹری صاحب آپکو اندازہ نہیں کہ آپکے خلاف کرمنل کیس چل رہا ہے۔ ہم آپکو یہاں سے جیل بھیج دینگے۔ کیا آپ یہاں تفریح کرنے آئے ہیں۔ عدالتی فیصلے پر تاحال عمل کیوں نہیں کیا گیا۔ ایسے کام نہیں چلے گا۔ایڈووکیٹ جنرل پنجاب احمد اویس نے بتایا کہ بلدیاتی اداروں کی بحالی سے متعلق بہت کام ہوچکا ہے۔ سپریم کورٹ نے چیف سیکرٹری پنجاب کامران افضل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے سابق چیف سیکرٹری پنجاب جاوید رفیق کو آئندہ سماعت پر ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا۔عدالت نے سیکرٹری لوکل گورنمنٹ پنجاب کو توہین عدالت کی درخواست پر وکیل کرنے کی مہلت دیتے ہوئے کیس کی سماعت 20 اکتوبر تک ملتوی کردی۔

About akhtarsahu

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

x

Check Also

عراق میں اسپتال کے باہر زوردار دھماکا، 4 جاں بحق اور 20 زخمی

بغداد: عراق کا شہر بصرہ زوردار دھماکے سے گونج اُٹھا جس میں ...

Powered by Dragonballsuper Youtube Download animeshow